گیلیلیو Galileo

Posted on 29/12/2005. Filed under: ٹیکنالوجی |

ہماری ٹریولز ایجنسی میں دو ائرلائنز ریزرویشن سسٹم ہیں،
١۔ اباکس
٢۔ گیلیلیو
گیلیلیو سسٹم اپنی چند خوبیوں کی بدولت مجھے بیحد پسند ہے اور میری کوشش ہوتی ہے کہ میں تمام تر ریزرویشن گیلیلیو پر ہی کروں، گیلیلیو ایک جی۔ڈی۔ایس (گلوبل ٹریول ڈسٹری بیوشن سسٹم) سسٹم ہے، اس سسٹم کے ذریعے ہم تقریبا دنیا بھر کی تمام ائرلائننز اور ہوٹلز کی بکنگ ڈیرہ غازی خان میں بیٹھے بٹھائے کر سکتے ہیں مگر یہاں جس گیلیلیو کی بات ہو رہی ہے وہ ہے یورپی یونین کا سیٹلائٹ گیلیلیو جو چودہ ہزار میل اوپر اپنے مدار میں پہنچ گیا ہے۔ اسے سیٹلائٹ نیویگیشن میں ایک نئے دور کا آغاز قرار دیا جارہا ہے۔
سیٹلائٹ نیویگیشن یعنی مصنوعی سیارچوں کی مدد سے اپنی منزل پر پہنچنے کے لئے راستے کا تعین کرنا۔ اب تک اس طرح کا خلائی نظام صرف امریکہ کے پاس تھا جسے عرف عام میں جی پی ایس ٹیکنالوجی کے نام سے جانا جاتا ہے۔ جی پی ایس ٹیکنالوجی کا استعمال آج کل کار کے ڈرائیور بھی کررہے ہیں جو کار کے چلنے کے ساتھ ساتھ راستہ بتاتا رہتا ہے۔
یورپی یونین کے اس گیلیلیو سیٹلائٹ پروجیکٹ پر بھارت، چین اور دیگر ممالک نے بھی سرمایہ کاری کی ہے۔گیلیلیو نظام کے اس پہلے سیٹلائٹ کو قزاقستان کے شہر بیکانور سے سویوز راکٹ کے ذریعے بدھ کی صبح جی ایم ٹی وقت کے مطابق پانچ بجکر بیس منٹ پر خلاء میں بھیجا گیا۔ اس پہلے سیٹلائٹ کا نام ہے جیوو اے اور یہ گیلیلیو کے نظام کی کامیابی کو ٹیسٹ کرے گا۔ اس کا اہم کام یہ بھی ہوگا کہ گیلیلیو نظام کی ایٹمی گھڑیوں کی جانچ بھی کرے۔ یہ سیٹلائٹ بین الاقوامی معاہدوں کے تحت طے پانے والے ریڈیو فریکوینسیز کو بھی اپنی گرفت میں لے گا اور آئندہ چھ ماہ کے اندر اس کے سِگنل زمین پر بھیجنا شروع کردے گا۔سائنسدان امید کررہے ہیں کہ یہ کام چند دنوں میں ہوسکے گا۔ جیوو-اے کو بنانے میں تین سال لگے ہیں اور یہ ایک خلائی جہاز کی طرح ہے۔
یورپ کے لیے یہ ایک اہم مشن اس لیے بھی ہے کیوں کہ اس نے کبھی زمین سے تئیس ہزار کلومیٹر کے آربِٹ میں اس طرح کوئی سیٹلائٹ نہیں بھیجا ہے۔ اس طرح گیلیلیو نیویگیشن نظام میں کل تیس سیٹلائٹ چھوڑے جائیں گے جو پوری زمین کا احاطہ کرسکیں گے۔

Make a Comment

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

Liked it here?
Why not try sites on the blogroll...

%d bloggers like this: