قوم کا ڈر دور کیجئے

Posted on 25/03/2008. Filed under: پاکستان, سیاست |

محسنِ پاکستان ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی نظر بندی
اکبر بگٹی کا قتل
کراچی حادثہ
لال مسجد و جامعہ حفصہ آپریشن
سوات و بلوچستان آپریشن
ایمرجنسی
ججوں کی برطرفی اور نظر بندی
محترمہ بینظیر بھٹو کی شہادت
ًایسے پے در پے واقعات سے پاکستانی قوم اپنے حال اور مستقبل سے بہت ڈری ہوئی ہے۔ میرے خیال سے آصف علی زرداری، میاں نواز شریف ملکی اور قومی مسائل کے بارے لاپراہ نہیں ہیں، انہیں ان مسائل کا پورا ادراک ہے۔ ان کے ساتھ ساتھ نومنتخب وزیراعظم مخدوم یوسف رضا گیلانی بھی یقیناََ نئے جذبے سے لیس ہیں اور یہ ان مسائل کے حل کے لئے دن رات محنت بھی کریں گے۔ ان سے پہلے سابقہ حکمرانوں نے بھی اپنے تئیں ان مسائل کے حل کے لئے پوری کوشش کی ہو گی، اس لئے نئے حکمرانوں کو مل بیٹھ کر سوچنا ہو گا کہ کانٹا کہاں ہے کیونکہ کہیں نہ کہیں ایسی خرابی ہے کہ قدم آگے نہیں بڑھ رہے۔ کوئی جھول ہے کہ مصرع وزن میں نہیں اور سُر ٹوٹ رہا ہے۔
اسے میرے جیسا کمزور ایمان مسلمان بے برکتی بھی کہہ سکتا ہے اور کوئی پڑھا لکھا پاکستانی ناقص منصوبہ بندی کہہ سکتا ہے۔ اس وقت ہماری حالت جوگنگ مشین پر کھڑے اس شخص کی سی ہے جو جوگنگ مشین پر کھڑا جوگنگ کر رہا ہے اور زور مار رہا ہے، پسینے میں شرابور ہو رہا ہے اور یوں محسوس ہوتا ہے جیسے وہ کئی کلو میٹر بھاگ چکا ہے لیکن جب تھک کر مشین کے اوپر سے اترتا ہے تو دیکھتا ہے کہ وہ تو وہیں کھڑا ہے جہاں مشقت سے پہلے کھڑا تھا۔ اس موقع پر منیر نیازی کا شعر یاد آ گیا، پیش ہے۔

منیر اس ملک پر آسیب کا سایہ ہے یا کیا ہے
کہ حرکت تیز تر ہے اور سفر آہستہ آہستہ

ایک پاکستانی ۔۔۔۔۔ میں یا کوئی اور ۔۔۔ حکمرانوں کی خدمت میں عرض کرتا ہے کہ اصلاح احوال پر قوم جس قدر اس وقت تیار ہے اس سے پہلے نہ تھی کیونکہ وہ اپنے حالات سے ڈر گئی ہے انہیں بدلنا چاہتی ہے لیکن ظاہر ہے اس کے لئے اسے لیڈر شپ اور مدبر قیادت کی ضرورت تھی جسے انہوں نے آپ کی صورت میں پا لیا ہے، اسی لئے عوام نے آپ کو دوتہائی اکثریت سے نوازا ہے اب یہ آپ کی ذمہ داری ہے کہ آپ عوام کو  کسی مثبت اور مفید تبدیلی کی طرف لیکر چلیں، ایک ایسی تبدیلی جس کے سرے پر روشنی کی لکیر دکھائی دیتی ہو۔
مشرقی پاکستان کے سانحے کے بعد قوم ایک بار پھر پگھلی ہو ئی ہے، انتہائی خطرناک اور نہایت ہی تشویشناک قومی مسائل کی وجہ سے قوم کی حالت کم و بیش ویسی ہی ہے جس طرح مشرقی پاکستان کے سانحے کے وقت تھی، آپ کی دوتہائی اکثریت اسی شدت احساس کا عملی نتیجہ ہے۔
اس پگھلی قوم کو لیڈر کسی بھی شکل میں ڈھال سکتے ہیں، یہ آپ کے لئے ایک انمول موقع ہے اسے ضائع مت کیجئے اور اس ڈری قوم کا ڈر دور کیجئے اسے امید دلائیے یہ آپ کا فرض بھی ہے اور ڈیوٹی بھی، یہ دوتہائی اکثریت اسی لئے ہے۔

Advertisements

Make a Comment

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

Liked it here?
Why not try sites on the blogroll...

%d bloggers like this: