کیا ججز بحال ہوں گے؟

Posted on 11/05/2008. Filed under: پاکستان, سیاست |

مجھے نہیں لگتا کہ ١٢ مئی کو جج بحال ہوں گے، حسب سابق اس بار بھی اس معاملے تو طول دیا جا رہا ہے۔ ظاہری طور پر اس کی بیھٹک اسلام آباد اعتزاز ہاؤس اور پوشیدہ طور پر گال مہار دبئی کے بعد اب لندن میں جاری ہے۔
این آر او اور ٥٨ ٹو بی کی دو دھاری تلوار، آصف علی زرداری کے ذہن میں ججز اور صدر کا خوف بیٹھ چکا ہے، اس لئے صبح کچھ اور شام کو کچھ اور بیان ہم سب کا منتظر ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے یہ معاملہ مزید الجھتا چلا جا رہا ہے۔ اس معمالے کو الجھانے کی تین وجوہات ہیں۔
پہلی وجہ ۔ صدر مشرف، جن کی جانب سے اشاروں کنائیوں میں کہا جا رہا ہے کہ اگر جج بحال ہوئے تو ٥٨ ٹوبی کا ہتھورا بھی چلے گا۔ اس کے خلاف حکومت عدالت میں نہیں جا سکے گی کہ وہاں وہی جج بیٹھے ہیں جنہیں حکومتی اتحاد تسلیم نہیں کرتا۔
دوسری وجہ ۔ قانونی پیچیدگیاں، موجودہ ججز کا کیا بنے گا، ججز کی معیاد اور جج کیسے بحال ہوں گے قومی اسمبلی کی قرارداد سے، ایگزیکٹیو آرڈر سے۔ اور سب سے اہم بات یہ کہ اگر جج ایگزیکٹیو آرڈر سے بحال کر بھی دیئے گئے تو اس کے چند سیکنڈ بعد ہی اس آرڈر کو صدر کے قانونی مشیر عدالت میں چیلنج کر دیں گے اور عدالت سے اس کے خلاف فیصلہ دے دے گی جس کے بعد ایک نیا قانونی بحران شروع ہو جائے گا۔
تیسری وجہ۔ این آر او، آصف علی زرداری کے قانونی مشیروں کا خیال ہے کہ جب جسٹس افتخار محمد چوہدری بحال ہوں گے تو عدالت میں این آر او پر نظر ثانی کی رٹ دائر کی جائے گی جس کے نتیجے میں آصف علی زرداری کو ایک بار پھر ملک چھوڑنا پڑے گا۔
یہ ہیں وہ اسباب جس کے تحت کم از کم مجھے تو ججز کی بحالی کا کوئی امکان نظر نہیں آ رہا۔ یہ سارا ٹوپی ڈرامہ ہوشربا مہنگائی، افراط زر میں اضافہ اور آنے والے بجٹ سے عوام الناس کی توجہ ہٹانے کے لئے رچایا جا رہا ہے۔

Make a Comment

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

Liked it here?
Why not try sites on the blogroll...

%d bloggers like this: