نگاہِ حسن شناس

Posted on 12/07/2008. Filed under: شعروادب |

نگاہ چاہیے ۔۔۔۔۔۔۔۔
حسن نگاہ چاہیے ۔۔۔۔۔۔۔۔
اِک ایسی نگاہ چاہیے۔
جو حسن شناس ہو۔
پُر فطرت، پُر اثر حسن نگاہِ حسن
آب تازہ ہوتی ہے۔
حسنِ نگاہ سے۔
فطرت کے جلوؤں کے لئے نگاہ چاہیے
نگاہ حسن شناس چاہیے۔
حسن شناس!
ہر لمحہ، ہر دم تازہ رہتا ہے۔
حسن قدرت اِنسان کے خیال کو جلا بخشتا ہے۔
اُمید کی کرن اللہ کے فطری فنگوں میں جلوہ گر ہے۔
نگاہ کرم!
نظر شناس بناتی ہے۔
نظر شناس!
حسن شناس بنتا ہے۔
حسن شناس پھر جلوے ہی جلوے دیکھتا ہے۔
تربیتِ انسان!
اِن خلوتوں، جلوتوں میں پنہاں ہے۔
حسن شناسی!
دل کی تازگی برقرار رکھتی ہے۔
ہر جلوہ چمن میں کھلا گل گلزار ہے۔
حسنِ نگاہ چاہیے۔
(فرخ)

Make a Comment

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s

2 Responses to “نگاہِ حسن شناس”

RSS Feed for Pakistani Comments RSS Feed

Pakistani » Blog Archive » نگاہِ حسن شناس…

نگاہ چاہیے ۔۔۔۔۔۔۔۔
حسن نگاہ چاہیے ۔۔۔۔۔۔۔۔
اِک ایسی نگاہ چاہیے۔
جو حسن شناس ہو۔
پُر فطرت، پُر اثر حسن نگاہِ حسن

Wah Ji Wah…

بہت خوب!!!
آپ کو یہاں ٹیگ کیا گیا ہے
http://auraq.urdutech.com/?p=200

الف نظامی’s last blog post..دوجی وار دا ٹیگ


Where's The Comment Form?

Liked it here?
Why not try sites on the blogroll...

%d bloggers like this: