علامہ اقبال . زندگی کا ایک دن

Posted on 09/11/2009. Filed under: پاکستان | ٹيگز:, , , |

Read Full Post | Make a Comment ( 4 so far )

شکر ہے اقبال مر گئے

Posted on 10/11/2007. Filed under: پاکستان | ٹيگز:, , , , , , , , |

مفکر پاکستان علامہ ڈاکٹر محمد اقبال کے صاحبزادے جسٹس (ر) ڈاکٹر جاوید اقبال نے کہا ہے کہ شکرہے علامہ اقبال مر گئے آج زندہ ہوتے تو جج یا وکیل ہوتے اور ڈنڈے ہی کھا رہے ہوتے ۔جمعرات کو ”جنگ“ کو انٹرویو دیتے ہو ئے ڈاکٹر جاوید اقبال نے کہا کہ فوج نے خود ہی لیڈر بنائے خود ہی مار دیئے قائد اعظم کے بعد ذوالفقار علی بھٹو صحیح لیڈر آئے تھے مگر انہیں پھانسی دے دی گئی نواز شریف کو فوج نے بنایا اور خود ہی دیس نکالا دے دیا فوج خود ہی لاتی رہی اور خود ہی خاتمہ کرتی رہی۔ علامہ مرحوم اپنے بیٹے کی آنکھوں سے دیکھ رہے ہیں کہ ان کے ملک کا کیا حشر ہو رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج علامہ اقبال اور قائد اعظم کے لئے جو کچھ کہا اور کیا جا رہا ہے وہ زبانی جمع خرچ سے زیادہ نہیں ہے آج ملک کے جو حالات ہیں ان سے لگتا ہے کہ یا تو علامہ اقبال نے ہمیں چھوڑ دیا ہے یا ہم نے اقبال کو چھوڑ دیا ہے ہم نے علامہ اقبال اور قائد اعظم کی تصویروں کو دیوار پر لگا رکھا ہے اور ان کے یوم پیدائش اور یوم وفات پر انہیں بس سلام کر لیتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ علامہ اقبال نے 1910میں نمودار ہونے والے دمدار ستارے کو دیکھ کر لکھا تھا کہ یہ ستارہ دیکھ کر انسان کی اپنی حیثیت ختم ہو جاتی ہے اور اب میں اپنے پوتوں کی آنکھوں سے یہ ستارہ دوبارہ دیکھ سکوں گا کیونکہ یہ ستارہ سو سال بعد نمودار ہوتا ہے ڈاکٹر جاوید اقبال نے کہا دمدار ستارہ تو پتہ نہیں علامہ اپنے پوتوں کی آنکھوں سے دیکھ سکتے ہیں یا نہیں البتہ وہ اپنے بیٹے کی آنکھوں سے یہ ضرور دیکھ رہے ہوں گے کہ ان کے ملک کا کیا حشر ہو رہا ہے انہوں نے کہا کہ آج علامہ کا یوم ولادت یا یوم وفات منانا صرف مزار کی پرستش ہی رہ گیا انہوں نے کہا علامہ اقبال قائد اعظم اور لیاقت علی خان کے بعد جو لوگ اقتدار میں آئے ان کا پاکستان کی تاریخ سے کوئی تعلق نہیں ۔انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال نے کہا تھا کہ 

ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی

مگر مجھے لگتا ہے کہ ہماری مٹی زرخیز ہی نہیں رہی ہم گمراہ ہو چکے ہیں۔

Read Full Post | Make a Comment ( 4 so far )

Liked it here?
Why not try sites on the blogroll...